May 28, 2016 atiadmin 0Comment

کراچی (پ ر)ملک کے پچاس فیصد سے زائدبچوں کو تعلیم و علاج جیسی بنیادی سہولیات میسر نہ ہونا لمحہ فکریہ ہے۔ حکومت کے حالیہ سروے کے مطابق اس ملک کی ساٹھ فیصد سے زائد آبادی یومیہ دو ڈالر پر گزارہ کرتی ہے ۔اس کا مطلب یہ بنتا ہے کہ اس ملک کی پچاس فیصد سے زیادہ آبادی اپنے بچوں کو تعلیم و علاج جیسی کوئی بھی بنیادی سہولت مہیا کرنے سے قاصر ہے ۔ان خیالات کا اظہارسیکریٹری اطلاعا ت انجمن طلبہ اسلام کراچی محمد معین الدین سیالوی نے 5جون کو انجمن طلبہ اسلام کراچی کے تحت ہونے والے تعلیم بچاؤطلبہ کنونشن کے سلسلے میں یونٹ کشمیر کالونی میں کارکنان انجمن سے ملاقات کرتے ہوئے کیا ۔انہوں نے کہا کہ پاکستان کا شمار تعلیم پر کم ترین حکومتی اخراجات کرنے والے ممالک میں ہوتا ہے جہاں حقیقت میں تعلیم کا بجٹ جی ڈی پی کے 2فیصد سے بھی کم ہے ۔ان حالات میں انجمن طلبہ اسلام کا تعلیم بچاؤ طلبہ کنونشن طلبہ کیلئے نوید ثابت ہو گا۔آخر میں ان کا کہنا تھا کہ انجمن طلبہ اسلام جلد تعلیمی نظام پر اپنی جامع پالیسی مرتب کر کے ارباب اقتدار کے حوالے کرے گی اور اس پر عمل در آمد کروانے کیلئے پر امن جدوجہد جاری رکھے گی۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *